Monthly Archives: November, 2010

Ghaus-e-Azam’s quote # 71


اپنے اور اُس کے درمیان سے مخلوق کے واسطوں کو اُٹھا دو۔ تمہارا ان واسطوں کے ساتھ پڑا رہنا ہوس ہی ہوس ہے۔ حکومت، سلطنت، تونگری اور عزت حق تعالیٰ کے سوا کسی کے لیے بھی نہیں ہے۔

Advertisements

Ghaus-e-Azam’s quote # 70


اگر تم چاہتے ہو کہ تمہارے سامنے کوئی دروازہ بھی بند نہ رہے تو اللہ عزوجل سے ڈرتے رہو، یہی ہر دروازے کی کنجی ہے۔

Ghaus-e-Azam’s quote # 69


حلال کھانے سے اپنے قلب کی صفائی کر۔ یقیناً حق تعالیٰ کی معرفت حاصل ہو جائے گی۔

Ghaus-e-Azam’s quote # 68


اوّل خلوت ہے اس کے بعد جلوت۔ اوّل گونگا بننا، اس کے بعد گویائی۔ اوّل آقا کی طرف توجہ کرنا، اس کے بعد غلام پر متوجہ ہونا۔

Ghaus-e-Azam’s quote # 67


سب چیزیں اسی سے طلب کرو جو چیز کا خالق ہے۔ اپنا سب کچھ اُسی کی طلب میں خرچ کر دو۔ اللہ والوں نے اپنے رب کے قرب کی طلب میں اپنی جانوں کو بھی خرچ کر دیا ہے۔ انہیں معلوم ہو گیا کہ وہ کیا چیز طلب کر رہے ہیں لہٰذا اپنی جانوں کا خرچ کرنا ان پر سہل ہو گیا۔ جو سمجھ لیتا ہے کہ وہ کیا چیز طلب کر رہا ہے تو اُسے جو کچھ بھی خرچ کرنا پڑے اُس پر سہل ہو جاتا ہے۔

Ghaus-e-Azam’s quote # 66


اقوال اور افعال میں اللہ والوں کی اتّباع کرو۔ ان کے خادم بنو اور اپنی جان و مال سے ان کا قرب حاصل کرو۔ جو کچھ بھی تم ان کو دو گے وہ تمہارے لیے ان کے پاس جمع ہوتا رہے گا۔ کل قیامت کے دن وہ اسے تمہارے حوالے کر دیں گے۔

Ghaus-e-Azam’s quote # 65


مومن کی خوشی ایمان و یقین کی قوت اور قلب کے دروازہٴ قربِ حق تک پہنچ جانے پر ہوا کرتی ہے۔ اچھی طرح سن لو کہ دنیا اور آخرت کے بادشاہ وہی ہیں جو اللہ تعالیٰ کے عارف اور اس کے لیے عمل کرنے والے ہیں۔

Ghaus-e-Azam’s quote # 64


اے مولوی! تیرا وعظ محض زبان سے ہے قلب سے نہیں ہے۔ صورت سے ہے معنی سے نہیں ہے۔ صحت مند قلب اس وعظ سے دور بھاگتا ہے جو زبان سے ہو قلب سے نہ ہو۔ ایسا وعظ سننے کے وقت اس کی ایسی حالت ہوتی ہے جیسی پنجرے کے اندر پرند اور مسجد کے اندر منافق۔

Ghaus-e-Azam’s quote # 63


جب تُو مخلوق کے لیے علم سیکھے گا تو مخلوق کے لیے عمل بھی کرے گا۔ جب اللہ کے لیے علم سیکھے گا تو اسی کے لیے عمل بھی کرے گا۔ جب دنیا کے لیے علم حاصل کرے گا تو دنیا ہی کے لیے عمل کرے گا اور جب آخرت کے لیے علم حاصل کرے گا تو آخرت کے لیے عمل کرے گا۔ شاخوں کا مدار جڑوں پر ہوتا ہے۔ جیسا کرے گا ویسا ثمر پائے گا۔

Mehfil-e-Milaad (26-03-2007)