Monthly Archives: November, 2013

Hazrat Ali’s quote # 369


مقابلہ

 

کسی کو مقابلے کے لیے نہ للکارو۔ اگر خود تمہیں پکارا جائے تو منظور کر لو کیونکہ پکارنے والا باغی ہوتا ہے۔

Advertisements

Hazrat Ali’s quote # 368


ظالم و مظلوم

 

قیامت کے لیے بد ترین سامان بندگانِ خدا پر ظلم ہے۔

ذلیل (مظلوم) میرے نزدیک عزیز و محترم ہے یہاں تک کہ اس کا حق ظالم سے واپس لے لوں۔ قوی و ستم گار میرے نزیک ناتواں ہے تاوقتیکہ مظلوم کا حق اس سے چھین نہ لوں!

Hazrat Ali’s quote # 367


ظالم و مظلوم

 

بے شک اللہ تعالیٰ نے جبّاروں کو اس وقت تک ہلاک نہیں کیا جب تک ان کو عیش و فراخی عطا نہیں کر دی اور کسی امت کی ہڈی کو اس وقت تک نہیں جوڑا جب تک پہلے ان پر شدت و صعوبت نازل نہیں کر دی۔

Hazrat Ali’s quote # 366


ظالم و مظلوم

 

عمار! (حضرت ابن یاسر) چھوڑو (ان ظالموں کو)۔ انہوں نے تو دین سے صرف اتنا ہی لیا ہے جو انہیں دنیا سے قریب کر دے۔ انہوں نے جانتے بوجھتے ہوئے معاملات کو اپنے لیے مشتبہ کر لیا ہے کہ ان شبہات کو اپنی لغزشوں کے لیے عذر بنا لیں۔

Hazrat Ali’s quote # 365


ظالم و مظلوم

 

ظالموں کے تین دستور ہیں؛ اپنے سے بَر تَر کی نافرمانی کرنا، کمزور کو دبانا، دوسرے ظالموں کی پشت پناہی کر کے ستم ڈھانا۔

Hazrat Ali’s quote # 364


ظالم و مظلوم

 

مظلوم کا دن ظالم کے لیے اس دن سے زیادہ سخت ہے جو ظالم کو مظلوم کے خلاف ملا تھا۔

Hazrat Ali’s quote # 363


زوال

 

دنیا میں انسان ایک نشانہ ہے، جس پر موت تیر چلاتی رہتی ہے۔ وہ کسی لٹے ہوئے قافلے کی طرح ہے کہ مصیبتیں اس پر ہر طرف سے آتی ہیں۔ اسے ہر گھونٹ میں اچھو اور ہر نوالے میں دکھ ہے۔ کسی شخص کو کوئی دوسری نعمت اس وقت ملتی ہے جب ایک نہ رہے۔ وہ زندگی کے کسی نئی دن کا استقبال اس وقت کرتا ہے جب موت کا ایک وار کم کر دے۔ ہم تو موت کے مددگار ہیں اور فنا کے نشانے، تو پھر بقاء کی اُمید کیسے کریں، جب کہ دن رات کسی چیز کو بلند ہوتے نہیں دیکھتے بلکہ دونوں اس بنائی ہوئی چیز کو گرانے کے لیے جلدی جلدی پلٹ کر آتے ہیں اور انھوں نے خود جسے جمع کیا ہے اسے متفرق کر دیتے ہیں۔

Hazrat Ali’s quote # 362


زوال

 

ہر آنے والا پلٹے گا۔ جو گیا وہ گویا تھا ہی نہیں۔

Hazrat Ali’s quote # 361


فتنہ و فساد

 

جنہوں نے اپنی تلوار نیام سے باہر نکال لی ہے، اپنا شر ظاہر کر دیا ہے، اپنے سواروں اور پیادوں کو اکٹھا کر لیا ہے، اپنے نفس کو شرارت پر آمادہ کر لیا ہے اور اپنے دین کو برباد کر لیا ہے، صرف اسی دنیائے دوں کے لیے جسے وہ حاصل کر رہے ہیں، اسی لشکر کے لیے جس کی سالاری وہ کر رہے ہیں اور اسی مقصد کے لیے جس پر وہ سر بلند ہیں لیکن یہ بہت برا سودا ہے کہ دنیا کو اپنے نفس کی قیمت اور اجرِ خداوندی کا عوض قرار دے دو۔

Hazrat Ali’s quote # 360


فتنہ و فساد

 

لوگوں کو جو چیز فتنہ و فساد سے روکے ہوئے ہے وہ ان کی بے چارگی اور طاقت و سرمائے کی کمی ہے۔