فتوح الغیب – مقالہ ۲


 

فتوح الغیب – مقالاتِ محبوبِ سبحانی شیخ عبد القادر گیلانی

مقالہ  ٢ – اتباعِ رسول اور اجراً کثیراً

قال القطب الرباني الشيخ أبو محمد عبد القادر الجيلاني في كتاب فتوح الغيب: اتبعوا ولا تبتدعوا. وأطيعوا ولا تمرقوا. ووحّدوا ولا تُشركوا. ونزهوا الحق ولا تتهموا. وصدّقوا ولا تشكوا. واصبروا ولا تجزعوا. واثبتوا ولا تنفروا. واسألوا ولا تسأموا. وانتظروا وترقبوا ولا تيأسوا. وتواخوا ولا تعادوا. واجتمعوا على الطاعة ولا تتفرقوا. وتحابوا ولا تباغضوا. وتطهّروا عن الذنوب وبها لا تدنسوا ولا تتلخطوا. وبطاعة ربكم فتزينوا. وعن باب مولاكم فلا تبرحوا. وعن الإقبال فيه فلا تتولوا. وبالتوبة فلا تسوفوا. وعن الاعتذار إلى خلقكم في آناء الليل وأطراف النهار فلا تملوا. فلعلكم ترحمون وتسعدون. وعن النار تبعدون. وفي الجنة تحبرون. وإلى الله توصلون. وبالنعيم وافتضاض الأبكار في دار السلام تشتغلون. وعلى ذلك تخلدون. وعلى النجائب تركبون. وبحور العين وأنواع الطيب وصوت القيان مع ذلك النعيم تحبرون. ومع الأنبياء والصديقين والشهداء والصالحين ترفعون.

فرمایا: سنت کی پیروی کرو۔ بدعت سے بچو۔ اللہ عزوجل اور رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی فرمانبرداری کرو اور ان کے حکم سے باہر نہ جاؤ۔ اللہ تعالٰی کو اکیلا جانو اور کسی کو اس کا شریک نہ ٹھہراؤ۔ اللہ سبحانہ و تعالٰی کو پاک جانو ہر عیب و نقصان سے اور تہمت مت لگاؤ اس کو جس سے پاک ہے۔ تصدیق کرو اور شک کو راہ نہ دو۔ صبر اختیار کرو اور دل برداشتہ مت ہو۔ ثابت قدم رہو اور پیچھے مت ہٹو۔ اسی سے سوال کرو اور رنجیدہ خاطر ہونے کی بجائے انتظار کرو۔ رحمتِ خداوندی کے امیدوار رہو اور ناامید مت بنو۔ عبادت میں اکٹھے رہو اور منتشر نہ ہو جاؤ۔ باہمی محبت و خلوص روا رکھو اور ایک دوسرے کے لیے دل میں غصہ پیدا نہ ہونے دو۔ اپنے دامن کو گناہوں سے داغدار ہونے سے بچاؤ۔ اپنے رب کی اطاعت سے خود کا آراستہ کرو اور اس کے درِ فیض سے دوری اختیار نہ کرو اور نہ ہی اس کی طرف متوجہ ہونے سے جی چراؤ۔ بارگاہِ خداوندی میں توبہ کرنے اور اپنے گناہوں کی معافی چاہنے میں رات ہو یا دن ہرگز تاخیر نہ کرو اور نہ ہی اس سلسلے میں ملول ہو۔ شاید رحمتِ خداوندی کا سایہ تمہیں اپنی پناہ میں لے لے اور جہنم کے بھڑکتے شعلوں سے نجات پا کر خوش و خرم منٹ کی مسرتوں سے شاد کام ہو جاؤ اور تمہیں وصلِ خدا حاصل ہو جائے اور اس جائے امن و سکون میں تجھے دار السلام کی نعمتوں سے نوازا جائے گا۔ یہ نِعَم سدا رہیں گے۔  وہاں عمدہ سواریاں، پاک باز خوبصورت کنواریاں، خوشبوئیں اور خوشگوار صدائیں تمہارے اطمینان و مسرت کے لیے ہوں گی۔ اور انبیاء، صدیقین، شہداء اور صالحین تمہارے ہم جلیس ہوں گے۔ اور یہ تو مقامِ علیین سے مشرف کیا جائے گا۔

If you want to receive or deliver something related to this post, feel free to comment.

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: